Courtesy: اردوپوانٹ

سب سے ضروری یہ ہے کہ میری شریک حیات کی میری بہنوں کے ساتھ اچھی بنے، شریک حیات کو ذہین، تعلیم یافتہ اور ذہنی ہم آہنگی ہونی چاہیے۔ چیئرمین پی پی بلاول بھٹو کا انٹرویو پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ شریک حیات میں حس مزاح ہونی چاہیے، سب سے ضروری یہ ہے کہ میری شریک حیات کی میری بہنوں کے ساتھ اچھی بنے، مجھے ڈریسنگ پسند نہیں ہے، والدہ کہتی غصے میں 10تک گنتی گننی چاہیے۔

نشے سے نجات کیلئےایک دُکھی دل کی پکار “یہ دھواں کھا گیا ، میری روح کو، میرے چین کو ” گلوکار سلطان بلوچ کا سلگتا ہوا نغمہ ، دلگداز آواز، دل کو چھو لینے والی دھن روح کو تڑپا دینے والے بول – ولنگ ویز پروڈکشن

انہو ں نے نجی ٹی وی سے خصوصی گفتگو میں بتایا کہ والدہ کہتی تھیں کہ کسی کے غصے کا جواب فوری غصے میں نہیں دینا چاہیے۔ والدہ نے نصیحت کی کہ غصے میں جواب دینے سے پہلے 10تک گنتی کرنی چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ جب والد قید میں تھے تووالدہ کہتی تھیں کہ اچھا وقت ضرور آئے گا۔ انہو ں نے کہا کہ والدقید تھے تومشکل دن تھے۔والد باہر آئے توہمارے اچھے دن آگئے۔انہوں نے کہا کہ مجھے آکسفورڈ میں داخلہ ملا تو والدہ بہت خوش تھیں، یہ ایک اچھی یاد تھی۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ پیپلزپارٹی موجودہ وقت کی جماعت ہے۔

پاکستان کوخوشحال اور ترقی یافتہ ملک بنائیں گے۔پاکستان میں تعلیم کو عام کریں گے۔انہوں نے ایک سوال پر کہا کہ شریک حیات میں حس مزاح ہونی چاہیے، سب سے ضروری یہ ہے کہ میری شریک حیات کی میری بہنوں کے ساتھ اچھی بنے، مجھے ڈریسنگ پسند ہے، والدہ کہتی غصے میں 10تک گنتی گننی چاہیے۔ضروری نہیں کہ کسی ایک کے ٹویٹ کو روزدیکھا کروں۔بلاول بھٹو نے بتایا کہ شریک حیات کوذہین، تعلیم یافتہ اور ذہنی ہم آہنگی ہونی چاہیے۔ شریک حیات میں حس مزاح ہونی چاہیے۔سب سے ضروری یہ ہے کہ میری شریک حیات کی میری بہنوں کے ساتھ اچھی بنے، مجھے ڈریسنگ پسند نہیں ہے۔