Courtesy: ڈیلی پاکستان

ترجمان دفتر خارجہ کی سربراہی میں پاکستانی وفد کرتار پور راہداری منصوبے کے سلسلے میں مذکرات کیلئے بھارت پہنچ گیا۔

نشے سے نجات کیلئےایک دُکھی دل کی پکار “یہ دھواں کھا گیا ، میری روح کو، میرے چین کو ” گلوکار سلطان بلوچ کا سلگتا ہوا نغمہ ، دلگداز آواز، دل کو چھو لینے والی دھن روح کو تڑپا دینے والے بول – ولنگ ویز پروڈکشن

ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل نے بھارت روانہ ہونے سے قبل واہگہ بارڈر پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم مثبت پیغام لے کر بھارت جا رہے ہیں اور امید کرتے ہیں کہ بھارت بھی قدم بڑھائے گا۔

انہوں نے کہا کہ پاک بھارت کشیدگی میں کمی کیلئے پاکستان نے اہم کردار ادا کیا جبکہ آج کرتار پور راہداری سے متعلق مذاکرات کیلئے بھارت جا رہے ہیں۔ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ کرتار پور راہداری کھولنے سے سکھ برادری کو سہولت اور دونوں ملکوں کے درمیان امن بھی قائم ہو گا۔
ڈاکٹر فیصل نے کہا کہ ہماری سوچ ہے ایک شجر ایسا لگایا جائے جس سے ہمسائے کے گھر بھی اس کا سایہ جائے۔ پاکستان اقلیتوں کے حقوق کو بہت اہمیت دیتا ہے۔انہوں نے کہا کہ کرتار پور راہداری منصوبے کا سنگ بنیاد 20 نومبر 2018 کو رکھا گیا تھا اور منصوبہ نومبر 2019 میں پایہ تکمیل تک پہنچ جائے گا۔

وزارت خارجہ کی سطح پر پاک بھارت مذاکرات آج سرحدی علاقے اٹاری میں ہو رہے ہیں۔