Courtesy: اردو پوانٹ

فیس بک اپنی تاریخ کے سب سے بڑے سیکنڈل کا سامنا کرنے کے بعد مستقبل میں ایسے حادثات سے بچنے کے لیے اقدامات کر رہا ہے۔ کیمبرج اینالیٹکا نامی ایک کمپنی نے ایک ایپلی کیشن کی مدد سے تقریباً 5 کروڑ صارفین کا ڈیٹا حاصل کیا تھا۔ اس ڈیٹا کو امریکی الیکشن میں ڈونلڈ ٹرمپ کو کامیاب بنانے کے لیے استعمال کیا گیا۔فیس بک نے کیمبرج اینالیٹکا کے بعد اپنے پلیٹ فارم سے مزید 200 ایپس کو معطل کر دیا ہے۔فیس بک کے وی پی آف پراڈکٹ پارٹنر شپ، آرچی بونگ، نے اعلان کیا کہ تھرڈ پارٹی ایپس کی تحقیقات کا وعدہ کیا گیا تھا اور اب یہ تحقیقات زور و شور سے جاری ہیں۔

نشے سے نجات کیلئےایک دُکھی دل کی پکار “یہ دھواں کھا گیا ، میری روح کو، میرے چین کو ” گلوکار سلطان بلوچ کا سلگتا ہوا نغمہ ، دلگداز آواز، دل کو چھو لینے والی دھن روح کو تڑپا دینے والے بول – ولنگ ویز پروڈکشن

فیس بک کی تحقیقات ایسی تمام ایپلی کیشن کے بارے میں کی جا رہی ہیں جنہوں نے 2014 میں فیس بک کی پالیسی کی تبدیلی سے پہلے صارفین کا ڈیٹا اکٹھا کیا تھا۔فیس بک نے ہزاروں ایپلی کیشنز کا جائزہ لینے کے بعد 200 کو معطل کر دیا ہے۔ فیس بک نے ایسی تمام ایپس کو معطل کیا ہے جو صارفین کے ڈیٹا کا غلط استعمال کر سکتی تھیں۔ فیس بک نے ابھی تک معطل ہونے والی ایپس کی فہرست جاری نہیں کی۔ اگلے مرحلے پر معطل شدہ ایپس کا مزید تجریہ کیا جائےگ ا۔ کمپنی نہ صرف ایپس مالکان کے انٹرویو کرے گی بلکہ آن سائٹ انسپکشن بھی کرے گی۔