Courtesy: اردو پوانٹ

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 اپریل2018ء)ملک میں گزشتہ سال کے دوران مائیکرو فنانس بینکوں کی جانب سے قرضوں کا حجم 202 ارب روپے سے تجاوز کر گیا ہے۔ یہ بات پاکستان مائیکرو فنانس نیٹ ورک کی جانب سے جاری اعدادوشمار میں کہی گئی ہے۔ پی ایم این کے مطابق گزشتہ سال کے اختتام پر 58 لاکھ لوگوں کو مجموعی طور پر 1.8 بلین روپے حجم کے فعال قرضے دیئے گئے۔ان افراد کا تعلق 106 اضلاع تھا۔ اسی طرح مختلف بینک میں اکائونٹ رکھنے والے بچتی کھاتوں کا حجم 186 ملین روپے تھا۔ اوسط قرضے کا حجم 48 ہزار 695 روپے ریکارڈ کیا گیا جبکہ بچت کی اوسط شرح 6033 روپے ریکارڈ کی گئی۔ پی ایم این کے مطابق 2020ئ کے اختتام تک قرضوں کا حجم 10 ملین تک بڑھانے کا ہدف مقرر کیا جا رہا ہے۔

نشے سے نجات کیلئےایک دُکھی دل کی پکار “یہ دھواں کھا گیا ، میری روح کو، میرے چین کو ” گلوکار سلطان بلوچ کا سلگتا ہوا نغمہ ، دلگداز آواز، دل کو چھو لینے والی دھن روح کو تڑپا دینے والے بول – ولنگ ویز پروڈکشن