Courtesy: ایکسپریس

ماہر امراض چشم ڈاکٹر شریف ہاشمانی نے کہا ہے کہ امراض چشم کی بڑی وجہ ذیابیطس کا مرض بھی ہے ایسے مریض جنھیں ذیابیطس ہے وہ باقاعدگی سے اپنی آنکھوں کا معائنہ کرائیں کیونکہ ذیابیطس اور لاپرواہی کی وجہ سے آنکھوں کے پردے شدید متاثر ہوتے ہیں۔یہ بات انھوں نے منگل کو اسپتال میں پریس کانفرنس کے دوران کہی اس موقع پر انھوں نے ہاشمانی میڈیکل ویلفیئر فاؤنڈیشن کے تحت ٹھٹھہ میں منعقدہ دو روزہ مفت میڈیکل اینڈ سرجیکل کیمپ میں دوران ٹیسٹ 80 فیصد مریضوں میں ہیپاٹائٹس بی اور سی کا انکشاف بھی کیا، ان کا کہنا تھا کہ 20 فیصد مریض ذیابیطس میں مبتلا پائے گئے ہیں، کیمپ کے دوران 123مریضوں کے موتیاکے مفت آپریشن کیے گئے، میڈیکل کیمپ کے تفصیل بتاتے ہوئے انھوں نے کہا کہ کیمپ ٹھٹھہ کے قادربخش بھٹو ٹرسٹ اسپتال میں منعقد ہوا جس میں 1100 سے زائد مریضوں کا معائنہ اور 500سے زائد کے لیبارٹری ٹیسٹ کیے گئے۔

نشے سے نجات کیلئےایک دُکھی دل کی پکار “یہ دھواں کھا گیا ، میری روح کو، میرے چین کو ” گلوکار سلطان بلوچ کا سلگتا ہوا نغمہ ، دلگداز آواز، دل کو چھو لینے والی دھن روح کو تڑپا دینے والے بول – ولنگ ویز پروڈکشن

ڈاکٹر شریف ہاشمانی نے بتایا کہ اس دوران مریضوں کی مختلف موتیا سمیت ہیپاٹائٹس پروفائل، کولیسٹرول اور ذیابیطس کی اسکریننگ بھی کی گئی، 500 مریضوں کے لیبارٹری ٹیسٹ میں 80 فیصد مریضوں میں ہیپاٹائٹس بی اور سی کے مرض کی تشخیص ہوئی ہے، ڈاکٹر شریف ہاشمانی نے کہا کہ یہ انتہائی تشویشناک صورت حال ہے، ارباب اختیار کچھ کریں، یہاں جلد آنکھوں کی بیماریوں کا مفت اسپتال قائم کریں گے۔انھوں نے بتایا کہ کیمپ کے دوران 123مریضوں کے موتیا کے مفت آپریشن کیے گئے، ڈاکٹر شریف ہاشمانی نے بتایا کہ ہاشمانی ز میڈیکل ویلفیئر فاؤنڈیشن کی جانب سے ٹھٹھہ کے غریب عوام کی سہولت کیلیے بہت جلد آنکھوں سمیت دیگر بیماریوں کا فلاحی اسپتال قائم کیا جائے گا جہاں لوگوں کی عزت نفس مجروع کیے بغیر انہیں مقامی اور کراچی سے آنیوالے سینئر ماہر سرجنز اور فزیشنز سے علاج کی سہولت فراہم کی جائیں گی۔

انھوں نے کہا کہ کسی بھی بیماری کی بروقت تشخیص اس کے مکمل علاج کے لیے انتہائی ضروری ہے، غریب عوام مالی سکت نہ ہونے کے باعث اسپتالوں کا رخ نہیں کرتے اور اپنی بیماری بڑھاتے رہتے ہیں پھر جب بیماری شدید یا لاعلاج ہو جاتی ہے اور موت کے قریب پہنچ جاتے ہیں تو تب بڑے اسپتال آتے ہیں، ٹھٹھہ میں اسپتال کے لیے قادر بخش بھٹو ٹرسٹ کے روح رواں قادر بخش بھٹو نے ہائی وے پر واقع اپنی عمارت فراہم کردی ہے جس پر وہ ان کے شکرگزار ہیں۔