Courtesy: ایکسپریس

معروف امریکی کمپنی ’ایپل‘ کے سی ای او نے اسکولوں میں ٹیکنالوجی کے بے تحاشا استعمال کو خطرناک قرار دیتے ہوئے اسے محدود کرنے مشورہ دے دیا ۔برطانیہ کے ایک اسکول میں طالب علموں سے خطاب کرتے ہوئے ایپل کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ٹِم کُک نے تدریس میں ٹیکنالوجی کے استعمال سے ہونے والے ممکنہ خدشات سے آگاہ کیا اور کہا کہ میں ٹیکنالوجی کے بے جا اور بے تحاشا استعمال پر یقین نہیں رکھتا، میں ان میں سے نہیں جو بہت زیادہ ٹیکنالوجی کے قائل ہوں اور اس بات پر بھی بھروسا نہیں رکھتا کہ جو یہ کہیں کہ ہر وقت ٹیکنالوجی استعمال کرکے انہیں کامیابی ملے گی۔

نشے سے نجات کیلئےایک دُکھی دل کی پکار “یہ دھواں کھا گیا ، میری روح کو، میرے چین کو ” گلوکار سلطان بلوچ کا سلگتا ہوا نغمہ ، دلگداز آواز، دل کو چھو لینے والی دھن روح کو تڑپا دینے والے بول – ولنگ ویز پروڈکشن

ٹِم کُک نے اسکولوں میں ٹیکنالوجی کے غیر محدود استعمال کو محدود کرنے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ اگر ادب کا کورس پڑھایا جارہا ہو تو کیا ہم اس میں ٹیکنالوجی استعمال کریں گے؟ یقیناً نہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اسکولوں میں ٹیکنالوجی کے استعمال کی حوصلہ افزائی بہت دیکھ بھال کر کرنا ہوگی اور اس کے لیے نگرانی کا عمل بھی متعارف کرانا ہوگا۔واضح رہے کہ سائنس دانوں نے تدریسی عمل میں ٹیبلٹ یا آئی پیڈ کے استعمال پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ الیکٹرونک ڈیوائسز کے مسلسل استعمال سے دماغی خلیات متاثر ہوتے ہیں جس سے لکھنے پڑھنے کی صلاحیت میں کمی آتی ہے۔