Courtesy: ڈیلی پاکستان

ایئرپورٹ حساس ترین جگہ ہوتی ہے جہاں دہشت گردی کے خطرے کے پیش نظر سکیورٹی انتہائی رکھی جاتی ہے لیکن برطانیہ کے مصروف ترین ایئرپورٹ ’ہیتھرو‘ کے وی آئی پی لاؤنج میں ایک ایسے شخص کے ملازمت کرنے کا انکشاف سامنے آیا ہے کہ جان کر ہر مسافر کے پیروں تلے زمین نکل جائے گی۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق اس شخص کا نام محمد عبدالہی محمود ہے اور خفیہ ایجنسیوں نے اس کے متعلق معلومات اکٹھی کرکے تہلکہ خیز انکشاف کیا ہے کہ یہ طویل مجرمانہ ریکارڈ عادی مجرم ہے اور اس کے دہشت گردوں سے بھی روابط تھے۔ اس شخص کا نام زیرنگرانی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل تھا لیکن اس کے باوجود یہ ہیتھرو ایئرپورٹ جیسی انتہائی حساس جگہ پر نوکری حاصل کرنے میں کامیاب ہو گیا جہاں اسے رن وے تک بھی رسائی حاصل تھی۔

نشے سے نجات کیلئےایک دُکھی دل کی پکار “یہ دھواں کھا گیا ، میری روح کو، میرے چین کو ” گلوکار سلطان بلوچ کا سلگتا ہوا نغمہ ، دلگداز آواز، دل کو چھو لینے والی دھن روح کو تڑپا دینے والے بول – ولنگ ویز پروڈکشن

رپورٹ کے مطابق اس 31سالہ شخص کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ اس کا مجرمانہ ریکارڈ 11سال پر محیط ہے۔ اس دوران اس کے خلاف ڈکیتی، اقدام قتل، منی لانڈری اور قتل کی دھمکیاں دینے سمیت متعدد الزامات کے تحت مقدمات درج کیے گئے۔ایئرپورٹ حکام مبینہ طور پر اسے نوکری دیتے وقت اس کے ماضی کی معلومات حاصل کرنے میں ناکام رہے اور اسے ملازمت پر رکھ کر اس کے ہاتھ میں سکیورٹی پاس تھما دیا۔ اس پاس پر وہ فرسٹ کلاس لاؤنج، کچن پورٹراور رن وے سمیت ایئرپورٹ کے تمام حصوں میں جا سکتا تھا۔سکیورٹی ذرائع نے سنڈے پیپل کو بتایا کہ ’’اتنے خطرناک جرائم میں ملوث شخص کس طرح ایسی نوکری حاصل کر سکتا ہے۔اگر وہ دہشت گرد نہیں بھی ہے تو اس کا باقی مجرمانہ ریکارڈ ہی اس قدر سنگین ہے کہ اسے یہ نوکری کسی صورت نہیں ملنی چاہیے تھی۔‘‘