اسلام آباد: فٹ بال کے عالمی نگراں ادارے فیفا نے پاکستان فٹ بال فیڈریشن کی رکنیت معطل کردی جس کے نتیجے میں ملک میں ہر طرح کی انٹرنیشنل فٹبال سرگرمیاں رک گئی ہیں۔

پاکستان فٹ بال فیڈریشن اور حکومت کے درمیان کئی سال سے جاری تنازع کا یہ شاخسانہ برآمد ہوا ہے کہ فیفا نے پاکستان فٹ بال فیڈریشن کی رکنیت ہی معطل کردی۔ پابندی کی وجہ سے نہ صرف انٹرنیشنل فٹبالرز پاکستان نہیں آسکیں گے بلکہ پاکستانی ٹیم بھی باہر نہیں جاسکے گی، جب کہ پاکستان کا کوئی فٹ بالر انفرادی طور پر بھی کسی بین الاقوامی مقابلے میں حصہ نہیں لے سکے گا۔

“میں نے تجربے سے سیکھا ہے کہ مجھے زندگی میں کسی ایکسکیوز کے پیچھے نہیں چھپنا” طٰہ صداقت Ceo ولنگ ویز “مجھے یقین ہے کہ زندگی میں آخرکار آپ وہ کر گزرتے ہیں جوآپ کرنا چاہتے ہیں”

Posted by Willing Ways on Tuesday, October 3, 2017

پاکستان فٹ بال فیڈریشن کے دو گروپوں کے درمیان فیڈریشن پر کنٹرول کا تنازع ڈھائی سال سے عدالت میں ہے۔ سیکریٹری پاکستان فٹ بال فیڈریشن احمد یار لودھی نے پابندی کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ فیفا نے فیصلے سے آگاہ کر دیا ہے، ملک میں اب ہر طرح کی انٹرنیشنل فٹبال سرگرمیاں معطل رہیں گی۔

فٹ بال کی عالمی گورننگ باڈی فیفا پاکستان میں فیصل صالح حیات اور کرنل ریٹائرڈ احمد یار لودھی کی فیڈریشن کو تسلیم کرتی ہے۔ ایکسپریس نیوز کے مطابق پاکستان نے فیفا کی تسلیم شدہ قومی فیڈریشن کے اکاؤنٹس بحال نہیں کیے اور ہیڈ کوارٹر کا کنٹرول واپس نہیں دیا جس پر فیفا نے یہ پابندی لگائی۔

واضح رہے کہ رواں سال جولائی میں بھی فیفا نے پاکستان کو متنبہ کیا تھا کہ اس کی تسلیم کردہ قومی فٹبال فیڈریشن کو مانتے ہوئے کنٹرول نہ دیا گیا تو پابندی عائد کردی جائے گی۔

Courtesy: ایکسپریس